SSP Muzaffarabad

SSP Muzaffarabad

SHARE

مظفرآباد(ناڑان نیوز) ایس ایس پی مظفرآباد محمد یٰسن بیگ نے کہا ہے کہ غیر قانونی اسلحہ اور منشیات فروشوں سمیت دونمبر گاڑیوں کے ڈیلرز کے خلاف منظم آپریشن شروع کردیا گیا ہے, کسی کو ٹائر جلا کر سڑک بند کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے, پرس چھیننے خواتین اور بچوں کو تنگ کرنے والوں کو معاف نہیں کریں گے, سوشل میڈیا پر اسلحہ کی نمائش اور اسکے آن لائن کاروبار کی اجازت نہیں نیشنل ایکشن پلان کے تحت کارروائی ہوگی شہری سائبر کرائم پھیلانے والوں کا حصہ نہ بنیں بلکہ غیر قانونی عمل کی فوری شکایت کریں ,ہوائی فائرنگ اسلحہ کی نمائش اور ون ویلنگ کے خلاف سخت ترین کارروائی ہوگی ,پولیس مستعد ہے سال 2019 کے مقابلے میں 2020 میں مقدمات کی شرح کم رہی جو خوش آیند ہے ضلع میں امن و امان برقرار رکھنا پولیس کا فرض ہے سرعام فائرنگ کرنے اور لوگوں کو زخمی کرنے والے ملزم پولیس کی حراست میں ہیں ان خیالات کا اظہار سینئر سپریٹنڈنٹ پولیس مظفرآباد نے یہاں اپنے آفس چیمبر میں سینر صحافیوں سے خصوصی گفتگو کرتےہوئے کیا – محمد یاسین بیگ نے بتایا کہ چیف انجنیئر شاہرات کے دفتر میں دوران ٹینڈرنگ دہشت گردی کے واقعہ کا ملزم نہ صرف گرفتار ہوا بلکہ اس پر دہشت گردی کا مقدمہ درج کرکے اس سے اسلحہ بھی برآمد کرلیا ہے۔انھوں نے کہا کہ پولیس نے اس واقعے کے بعد وہی کیا جس کی قانون اجازت دیتا تھا عوام کی جانیں عزیز ہیں اس لئے ہم نے حکمت کے ساتھ مزید نقصان ہونے سے سب کو بچایا- انھوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ضلع بھر میں کسی کو ٹائر جلا کر شاہرات بلاک کرنے ریاستی املاک کو نقصان پہنچانے کی قطعی اجازت نہیں دے سکتے اب ایسے واقعات پر زیادہ نفری فراہم کرکے سخت اور فوری ایکشن لیں گے دارالحکومت ہونے کے ناطے ہم ہمہ وقت ٹریفک بحال رکھنے کے ذمہ دار ہیں شہر سے نان کسٹم چوری اور دو نمبر کاغذات و نمبر پلیٹ سمیت بینک ڈیفالٹر گاڑیوں کے خاتمے کے لئے آپریشن جاری ہے درجنوں گاڑیاں پکڑی جاچکی ہیں اب جس سے ایسی گاڑی پکڑی جائے گی اس کے خلاف فوری مقدمہ ہوگا ایسی گاڑیاں فروخت کرنے والوں کو پہلے گرفتار کریں گے, ایک سوال کے جواب میں ایس ایس پی نے کہا کہ سوشل میڈیا پر غیر قانونی اسلحہ کی خریدو فروخت کا سراغ لگالیا ہے جلد ایسے عناصر سلاخوں کے پیچھے ہونگے انھوں نے بتایا کہ 2020 میں قتل,اغوا, چوریوں وڈکیتیوں کے واقعات میں کمی واقع ہوئی ہے البتہ بلوہ اور لڑائی جھگڑے گزشتہ سال کے مقابلے میں ایک فیصد بڑھے ہیں سال 2020 میں کل 2176 مقدمات درج ہوئے جن میں کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر 1021 مقدمات بھی شامل ہیں – 1866 مقدمات عدالتوں میں چالان ہوچکے, 2کروڑ 75 لاکھ 37 ہزار 660 روپے کی چوریاں ہوئیں جن میں 2کروڑ 6 لاکھ 98 ہزار790 روپے کی برآمدگی کرکے اصل مالکان کو دیدیں ہیں جو 75 فیصدریکوری بنتی ہے بقیہ بھی ان شااللہ برآمد کروائیں گے- پورے سال ضلع بھر میں26 ملزمان سے 35 عدد اسلحہ برآمد ہوا ,منشیات کے 122 مقدمات درج ہوئے 163 ملزمان میں سے 11سو بوتل شراب وکپی جبکہ 42 کلو گرام چرس و ہیروین برآمد کی گئی.جبکہ مختلف مقدمات میں 15 سو کے قریب ملزمان گرفتار ہوئے .انھوں نے بتایا کہ کرونا ایس اوپیز پر ہم نے سختی سے عملدرآمد یقینی بنایا خلاف ورزیوں پر 1505 ملزمان گرفتار کرکے ان پر 1021 مقدمات قائم کئے – 6476 موٹر سائیکل اور 21ہزار894 گاڑیوں کو ضبط و جرمانے کیئے۔166 دکانات کے مالکان کو جرمانے بھی ہوئے کل جرمانوں کی لاگت جو صرف کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر کیے مبلغ 59لاکھ 87 ہزار550 روپے بنتے ہیں جو خزانہ سرکار میں جمع کئے گئے انھوں نے بتایا کہ ٹریفک نظام کو بہتر کیا ہے رانگ پارکنگ,اوور ٹیک,تیز رفتاری, بدوں ہیلمٹ اور کم عمر ڈرائیونگ,اوورلوڈنگ,ایس او پیز سے ہٹ کر سواریاں بٹھانے والوں کی 28ہزار551 گاڑیاں اور 51ہزار 416 موٹر سائیکلز ضبط کی گئیں جنکی کل تعداد 80 ہزار بنتی ہے پر 2 کروڑ 49 لاکھ 52 ہزار 50 ہزار 50 روپے جرمانے کئیے گئے ہیں. محمد یسٰن بیگ نے بتایا کہ دارالحکومت کے تین تھانوں کی جدید عمارات تیار ہوچکی ہیں جن میں حوالاتیوں کو رکھنے کی وسیع گنجائش کے ساتھ سائلین کو باعزت بٹھانے کے لئے گنجائش رکھی گئی ہے شہری کسی بھی غیر قانونی کام کو دیکھیں تو بلاجھجک قریبی پولیس اسٹیشن کو اطلاع کرکے ذمہ دار شہری ہونے کا ثبوت دیں-